مانگنے کا مزہ آج کی رات ۔۔۔ لیلتہ القدر


0
46 shares

یوں تو اللہ تعالیٰ کے پیدا کردہ تمام دن اور تمام مہنوں میں اللہ تعالیٰ نے کچھ نا کچھ حکمت پوشیدہ رکھی ہے۔ اللہ تعالیٰ ہر رات اور ہر وقت ہمیں رزق دینے اور معافی دینے پر قادر ہیں۔ الپتہ رمضان المبارک کی مسلم کلینڈر میں خصوصی اہمیت ہے۔ اس مہینے کو اللہ تعالیٰ کے محبوب نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی امت کا مہنہ قرار دیا جاتا ہے۔ اللہ تعالیٰ اس ماہ مسلمانوں کے لئے اپنی نعمتوں اور رحمتوں کے تمام در کھول دیتا ہے۔ مسلمان پورے مہینے روزہ رکھتے ہیں اور باقی کے ایام کے مقابلے میں زیادہ عبادات بھی کرتے ہیں۔

اس پورے مہینے کے مقابلے آخر کے 10 دن یعنی آخری عشرہ انتہائی اہمیت رکھتا ہے۔ اگر آسان الفاظ میں کہا جائے کہ رمضان ایک بہترین مہینہ ہے تو آخری عشرہ اس کا دل ہے ۔ کیونکہ اس آخری عشرے میں سے 5 راتیں ایسی ہیں جو نہایت اہمیت رکھتی ہیں۔ 21 رمضان، 23 رمضان، 25 رمضان، 27 رمضان اور 29 رمضان۔ ان دنوں کی راتوں میں ایک ایسی رات پوشیدہ کررکھی ہے جس کی اہمیت اور آ فضیلت اپنی ہے کہ اس میں کی گئی عبادات ہزاروں سالوں کی گئی عبادات سے افضل ہے۔ اس رات کو تمام راتوں کا سردار کہا جاتا ہے۔

اس رات کو لیلتہ القدر کہا جاتا ہے۔ جس میں قدر کے معنی تقدیر کے ہیں۔ اللہ تعالیٰ تمام انسانوں کی زندگی، موت، روزی، بخشش سب کا تعین اس ہی رات ہوتا ہے۔ دوسری جانب یہ رات رحمتوں کے نزول ، گناہوں کے بخشش طلب کرنے کی بھی رات ۔ قرآن پاک کی دو سورہ جن میں سورہ القدر اور سورہ الدخان میں اس رات کا ذکر بھی موجود ہے۔ جبکہ ہمارے پیارے آقا حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر اس ہی رات قرآن بھی نازل کیا گیا ہے۔

حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رمضان آیا تو رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ روزے رکھو، اس مہنے میں ایک ایسی رات ہے جو 10000 مہنوں سے بہتر ہے ۔ جو شخص اس سے محروم ریا وہ بھلائی سے محروم رہا اور لیلتہ القدر کے صادت سے صرف بدنصیب ہی محروم کیا جاتا ہے۔ ابن ماجہ 1333

س رات کی فضیلت جہاں بے انتہا ہے وہیں یہ رات جہاں اللہ کے رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے بدلے ملنے والی رات ہے۔ جب آپ صلی الله علیہ وسلم پر پچھلی امتوں کی عمروں سے آگاہ کیا گیا تو آپ صلی الله عليه وسلم اپنی امت کے لئے پریشان ہوگئے کہ میری امت پچھلی امتوں کی عبادات کا مقابلہ کیسے کرسکتی ہیں، انکی عمریں تو بہت طویل ہوا کرتی تھیں۔ جوں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو اور ان کی امت کو لیلتہ القدر کا تحفہ اللہ نے عطا کردیا۔ جس کی عبادات ہزار سالوں سے بھی زیادہ ہے۔

اس رات کو عمومی طور پر لوگ خاص کر نوجوان عید کی خریداری میں ضائع کردیتے ہیں ۔۔ اس سال پاکستان سمیت دنیا بھر میں کورونا وائرس کے پیش نظر حالات کافی خراب ہیں، رات میں بازار اور مالز بند ہیں۔ لہذا مسلمانوں کو خاص کر نوجوانوں کے پورے حالات سے فائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے ۔ وہ یہ رات عبادات کی نظر کریں، زیادہ سے زیادہ نوافل کا اہتمام کریں۔ قرآن پاک کی تلاوت کریں اور بے شمار دفعہ اپنے رب کے حضور اسغفار کا ورد کریں۔ ہم سب کے ۔محبوب پیغمبر پر کثرت سے دود پاک بھجیں ۔کیا پتہ اس سال کی شب قدر 27 رمضان یا 29 رمضان کو ہو۔ کہیں آپ محروم نے رہے جائیں لہذا عبادات میں مصروف ہوں، اپنے رب کو راضی کرنے کی کوشش کریں اور پچھلے تمام گناہوں کو کیا پتہ اللہ تعالیٰ آج کی رات معاف فرما دے۔ کیا پتہ یہ شاید ہم سب کی زندگی کی آخری شب قدر ہو اور پھر ہم موقع سے محروم ہوجائیں۔ اللہ تعالیٰ معاف فرمانے والا ہے اور اس رات کی گواہی تو خود ہمارے پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے دی۔


Like it? Share with your friends!

0
46 shares

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format