تائیکوانڈو کی ننھی کھلاڑی عائشہ ایاز کا بڑا کارنامہ، سونے اور چاندی کا تمغہ جیت لیا


0

وادی سوات سے تعلق رکھنے والی تائیکوانڈو کی ننھی کھلاڑی عائشہ ایاز نے تھائی لینڈ میں ہونے والی انٹرنیشنل تائیکوانڈو چمپیئن شپ میں گولڈ میڈل اور ایک سلور میڈل جیت لیا۔ عائشہ ایاز 2 گولڈ، ایک سلور اور ایک برونز میڈل جیتنے والی پہلی فی میل پاکستانی بن گئی ہیں۔

گیارہ سالہ عائشہ ایاز کسی بھی انٹرنیشنل ایونٹ میں گولڈ، سلور اور برونز میڈل جیتنے والی پہلی کم عمر پاکستانی ایتھلیٹ بن گئی ہیں۔ ایونٹ میں پاکستان کے نام تمغے سمیٹنے کے بعد عائشہ ایاز نے سیلاب متاثرین کے لئے 50 ہزار روپے امداد کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں سیلاب کا سن کر بہت دکھ ہوا ہے، اس مشکل گھڑی میں قوم کے ساتھ کھڑی ہوں۔

Image Source: Instagram

عائشہ ایاز نے اپنا گولڈ میڈل ڈی سی سوات جنید خان کے نام، اور سلور میڈل وزیر کھیل عاطف خان کے نام کر دیا۔ واضح رہے کہ عائشہ  پاکستان کے ہونہار کھلاڑی اور کوچ ایاز نائک کی بیٹی ہیں اور وہ اس سے قبل 2020ء میں دبئی میں منعقد ہونے والے تائیکوانڈو کے بین الاقوامی مقابلوں میں انڈر 10 کیٹیگری میں گولڈ میڈل جیت کر تاریخ رقم کرچکی ہیں۔

عائشہ ایاز کی کامیابی پر تائیکوانڈو فیملی کی طرف سے پریزیڈنٹ کرنل وسیم جنجوعہ اور سیکریٹری جنرل مرتضیٰ حسن بنگش نے مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ عائشہ ایاز ہمارے ملک کا اثاثہ ہے، جو مستقبل میں بھی بین الاقوامی سطح پر ملک کا نام روشن کرتی رہیں گی۔

Image Source: Instagram

کوچ اور والد ایاز نائک نے تمام دوستوں، احباب اور پاکستان تائیکوانڈو فیڈریشن کا شکریہ ادا کیا، جن کے تعاون کے بغیر عائشہ کی ٹریننگ اور چیمپیئن شپ شمولیت ممکن نہ تھی۔ انہوں نے کہا کہ اگر عائشہ خان جیسے بہترین کارکردگی دکھانے والے بچوں کو اسی عمر میں سپورٹ کیا جائے تو ملک میں کھیلوں میں کئی اور مقابلوں میں بین الاقوامی سطح پر نام روشن کیا جاسکتا ہے۔

مزید پڑھیں: گلگت بلتستان کی 4 سالہ بچی نے اسکیٹنگ میں سلور میڈل جیت لیا

یہاں یہ بتاتے چلیں کہ بچوں کو اوائل عمری سے ہی تائیکوانڈو سکھانے کے بہت فائدے ہوتے ہیں۔ بچوں کی جسمانی فٹنس کے ساتھ ساتھ انہیں اپنی عزت نفس قائم رکھنے، اعتماد میں اضافہ کرنے، اسٹیمنا بڑھانے، اسٹریس سے لڑنے، ٹینشن کو دور رکھنے اور ذہنی اور روحانی صلاحتیں بہتر کرنے میں بہت مدد ملتی ہے۔ مشکل اس کھیل یا جسمانی سرگرمی سے خوشیوںکے ہارمونز اینڈورفنز اور سیروٹونن  متحرک ہو جاتے ہیں۔ اس سے نشست و برخاست، جسمانی لچک میں اضافہ، ریفلیکسز میں بہتری اور فرائض کو تیزی سے انجام دینے کی صلاحیت پیدا ہوتی ہے۔

یاد رہے کہ رواںِ برس گلگت بلتستان کی 4 سالہ بچی ماہ نور نے ونٹر اسپورٹس میں اسکیٹنگ کے مقابلے میں سلور میڈل جیت کیا۔ میڈل جیتنے کے بعد جب ننھی ماہ نور نے اپنے قد سے دوگنا بڑے کھلاڑیوں کے ہمراہ سبز ہلالی پرچم لہرایا تو شائقین نے دل کھول کر داددی جبکہ ماہ نور نے معصوم انداز میں اپنی جیت کا پیغام دنیا بھر تک پہنچایا۔


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format