بھارت میں شادی سے انکار پر مسلمان لڑکی کو زندہ جلا دیا گیا


0

بھارت میں نریندر مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد سے لیکر اب تک مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں پر جو ہولناک ظلم ہوئے اس سے کون نہیں واقف ہے۔ ہندوتوا سوچ کے حامل وزیراعظم نے اقلیتوں خاص کر مسلمانوں کے خلاف جس نفرت کو پھیلایا اس کے نتائج پھر بعد میں مسلمانوں کی آبادیوں میں حملے کی صورت میں سامنے آیا، روڈ پر چلتے ہوئے مسلمانوں کو گائے کا گوشت کھانے پر بےدردی کے ساتھ قتل کیا جانا معمول بن گیا۔

اس ہی سلسلے کا ایک اور واقعہ رواں ہفتے بھارتی ریاست بہار کے علاقے ویشالی میں پیش آیا جہاں اب کی بار انتہاء پسندوں نے بزدلی کی ساری حدیں پار کردیں اور نشانہ بنایا ایک معصوم نوجوان لڑکی کو، جس نے ہندو لڑکے سے شادی سے انکار کیا، تو اسے زندہ جلا دیا گیا۔

Image source: Twitter

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق واقعہ کچھ یوں ہے کہ ستیش نامی ایک ہندو نوجوان جو کافی دن سے ایک 20 سالہ مسلمان نوجوان لڑکی گل ناز کو تنگ کررہا تھا، اس دوران ستیش نے گل ناز سے شادی کی خواہش ظاہر کی، جسے گل ناز نے منع کردیا، لہذا چند دن بعد ستیش نے اپنے والد اور ایک دوست کے ساتھ مل کر گل ناز کو زندہ جلا دیا۔

تفصیلات کے مطابق آگ لگ جانے سے گل ناز انتہائی بری طرح متاثر ہوئی، جسے زخمی حالت میں فوری طور پر طبی امداد کے لئے قریبی اسپتال منتقل کیا۔ اس دوران ہسپتال لے جاتے ہوئے گلناز نے ویڈیو پیغام میں آگ لگانے کا الزام ستیش نامی نوجوان پر عائد کرتے ہوئے بتایا کہ ستیش بار بار شادی کے لیے دباؤ ڈال رہا تھا اور ہر بار میں نے انکار کردیا تھا۔ تاہم اس روز وہ کچرا پھینکنے سے دروازے سے باہر آئی تو ستیش نے اپنے والد اور ایک اور شخص کی مدد سے مجھے گھسیٹ کر لائے اور پٹرول چھڑک کر آگ لگادی۔ جس کے بعد یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

جبکہ ڈاکٹروں نے اس واقعے میں گل ناز کے 60 فیصد جسم کے جل جانے کی تصدیق کی۔ بعدازاں دو ہفتوں تک گل ناز اسپتال میں زیر علاج رہی البتہ گل ناز رواں ہفتے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے اسپتال میں دم توڑ گئی۔

Image source: Twitter

دوسری جانب بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق اس وقت گل ناز کے اہلخانہ نے پولیس کی جانب سے تعاون نہ کرنے اور انصاف کے حصول کے لئے بیٹی کی میت کے ہمراہ ایک سڑک پر دھرنا دیا ہوا پے۔

گل ناز کے اہلخانہ کے مطابق اس واقعے کو دو ہفتے سے زائد کا عرصہ ہوچکا ہے۔ گل ناز نے ویڈیو بیان میں مجرمان کے نام بتائیں تاہم پولیس کی جانب سے مجرمان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی جارہی ہے۔ مجرمان ابھی تک آزاد گھوم رہے ہیں۔ پولیس مجرمان کا ساتھ دے رہی ہے۔ لہذا وہ انصاف چاہتے ہیں کہ مجرمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

اس دوران بھارت میں کئی فلاحی اور سیاسی تنظیموں کی جانب سے گل ناز کے قتل کے خلاف آواز بلند کی جارہی ہے اور پُرزور مطالبہ کیا جارہا ہے کہ بااثر مجرمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے سزا دی جائے۔


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format