اشانت شرما نے آئی پی ایل میں سیمی کو “کالو” کہہ کر مخاطب کیا


-1
16 shares, -1 points

سابق کپتان ویسٹ انڈیز اور دو بار اپنی قیادت میں ویسٹ انڈیز عالمی ٹی ٹونٹی ورلڈکپ جتوانے والے ڈیرن سیمی نے حالیہ دنوں کیا ایک حیران کن انکشاف جس میں انہوں نے بتایا کہ وہ جب انڈین پریمئیر لیگ میں حیدرآباد سن رائزرز کی نمائندگی کرتے تھے تو اس وقت انھیں کالو کہہ کر مخاطب کیا جاتا تھا۔

اس بات کا انکشاف انہوں نے سوشل میڈیا ویب سائٹ انسٹا گرام پر ایک پوسٹ کے ذریعے کیا، انہوں نے کہا انڈین پریمیئر لیگ میں میں ان کے خلاف نسل پرستانہ جملوں کا استعمال ہوا کرتا تھا۔ ان کو کئی کھلاڑی کالو کہہ کر مخاطب کیا کرتے تھے ان کو ابتداء میں لگتا تھا کہ گویا اس کے مطلب طاقتور کے ہیں۔ البتہ آج ان کو اس کے مطلب پتہ لگ گئے ہیں۔ جس پر ان افسوس ہے۔ ان کو اس بات کا۔بلکل بھی علم نہیں تھا کہ یہ جملے ان کے رنگ کو دیکھ کر استمعال ہوا کرتے تھے۔

ساتھ ہی ڈیرن سیمی نے یہ بھی بتایا کہ یہ جملے محض ڈیرن سیمی کے لئے نہیں بلکہ سری لنکن آل راؤنڈر تھیسارا پریرا کے لئے بھی استعمال ہوتے تھے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ جب بھی کبھی ڈریسنگ روم میں ان کو اور تھیسارا پریرا کے کالو کہا جاتا تھا تو وہاں سب ہنستے تھے اور ان کو اندازہ نہیں تھا کہ یہ کس بات پر ہنستے ہیں۔

البتہ اس معاملے کے منظر عام پر ابھی بحث جاری ہی تھی کہ سوشل میڈیا پر اشانت شرما کی ایک چھ سال پرانی پوسٹ وائرل ہوگئی جس میں سن رائزرز حیدر آباد کے کھلاڑی بس میں کہیں سفر طے کررہے ہیں۔ اس تصویر میں اشانت شرما، بھنویشونر کمار، ڈیرن سیمی اور ساؤتھ افریقی فاسٹ باؤلر ڈیل اسٹین موجود ہیں۔ جبکہ اشانت شرما کی جانب سے جو کیپشن لگایا گیا جس میں صاف صاف لکھا ہے می یعنی میں، بھوی یعنی بھنویشونر کمار، کالو یعنی ڈیرن سیمی اور گن سن رائزرز یعنی ڈیل اسٹین۔ اس تصویر کے کیپشن سے یہ بات بلکل واضح ہوجاتی ہے کہ انڈین پریمیئر لیگ میں نسل پرستانہ جملوں کا استعمال ہوا کرتا تھا۔

View this post on Instagram

Me, bhuvi, kaluu and gun sunrisers

A post shared by Ishant Sharma (@ishant.sharma29) on

یاد رہے کہ ڈیرن سیمی یہ معاملہ اس وقت اٹھایا ہے جب دنیا کے سب سے ترقی یافتہ ملک سمجھے جانے والے ملک امریکہ میں ایک سیاہ فام جارج فلائیڈ کو چوری کے شبے میں پولیس حراست میں لیتی ہے اور وہیں سٹرک پر ایک پولیس والے کے ہاتھوں اس کا قتل ہوجاتا ہے۔ جس کے بعد پورے امریکہ میں جارج کی حمایت میں مظاہرہ پھوٹ پڑتے ہیں۔ جبکہ ویسٹ انڈیز سوپر اسٹار ڈرین سیمی بھی اس حوالے سے جارج کے قتل کی مذمت کرچکے ہیں اور نسل پرستی کے خلاف اپنی آواز بھی بلند کررہے ہیں۔


Like it? Share with your friends!

-1
16 shares, -1 points

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format