ملکہ برطانیہ نے کیا پاکستانیوں کی خدمات کا اعتراف، پاکستانیوں کے سرفخر سے بلند


0
19 shares

پاکستانیوں کے لئے ایک اور فخر کا مقام، ملکہ برطانیہ نے نوازا دو پاکستانی نوجوان حذیفہ احمد اور سید حسان عرفان کو کامن ویلتھ پوائنٹس آف لائٹ ایوارڈ کے اعزاز سے۔

پاکستانی رضاکار حزیفہ احمد اور سید حسان عرفان کو انکی زبردست رضاکارانہ خدمات کے اعتراف میں ملکہ برطانیہ جہاں ان کو عالمی سطحی ایوارڈ سے نوازا وہیں برطانوی ہائی کمیشن میں منعقدہ تقریب میں خود ایک فون کال کے ذریعے ان دنوں نوجوانوں کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے مبارکباد پیش کی اور ان کے عظم و حوصلے کی بھی خوب تعریف کی۔ اس تقریب میں برطانوی ہائی کمیشن ڈاکٹر کرسٹن ٹرنر بھی موجود تھے۔

یاد رہے پاکستانی نوجوان حذیفہ احمد اور سید حسان عرفان ملک میں غربت کے خاتمے کے لئے رزق نامی ایک ادارے کو چلارہے ہیں جس میں وہ اضافی کھانے کو جمع کرکے ایسے لوگوں تک پہنچاتے ہیں جو غربت کے باعث دو وقت کی روٹی سے محروم ہیں۔اس وقت ان کا یہ پروگرام ملک کے تقریباً 23 شہروں میں جاری ہے۔ جبکہ اس پروگرام کا آغاز انہوں نے سال 2015 میں ایک یونیورسٹی پروجیکٹ کے تحت کیا تھا۔

جبکہ دوسری جانب حکومت برطانیہ کی جانب سے جاری کردہ ایک تحریری بیان کے مطابق وہ رزق نامی ادارے کے سی ای او حزیفہ احمد اور ڈائریکٹر سید حسان عرفان کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ان کی غریب آبادیوں تک کھانا پہچانے کاوش خاص کورونا وائرس کے دنوں میں وہ مثالی ہے۔

ساتھ ہی اس ایوارڈ کے حوالے سے اگر بات کرلی جائے تو دی کامن ویلتھ پوائنٹس آف لائٹ ایوارڈ ملکہ برطانیہ کے ہیڈ آف کامن ویلتھ کنٹریز کی حیثیت سے صوابدید پر ہوتا ہے کہ وہ 54 کامن ویلتھ ممالک میں رضاکارانہ خدمات کے اعتراف میں کسی کو بھی دے سکتی ہیں۔

جبکہ ایوارڈ جیتنے والے رزق کے سی ای او حذیفہ احمد اور سید حسان عرفان نے خدمات کا اعتراف کرنے اور ایوارڈ دینے پر شکریہ ادا کیا بعدازاں سید حسان عرفان نے ٹوئیٹ کے ذریعے اپنے مزید خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں اس ایوارڈ پر برطانوی شاہی خاندان، کامن ویلتھ اور پوائنٹ آف لائٹ کا ہماری خدمات کو اعتراف کرنے پر شکریہ ادا کرتا ہوں ۔ ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ ملکہ برطانیہ سے بات کرنا ایک اعزاز کی بات ہے ۔ جبکہ انہوں نے ملکہ برطانیہ اور ہائی کمشنر کرسٹن ٹرنر سے اپنے پروگرام کے حوالے سے بھی مزید بتایا کہ وہ اس پروگرام کے تحت کس طرح بھوک و افلاس کا خاتمہ کرسکتے ہیں۔

البتہ اس سے قبل بھی تین پاکستانی شہریوں کو دی کامن ویلتھ پوائنٹ آف لائٹ ایوارڈ سے نوازا جاچکا ہے جن میں محمد امجد ساقب ، حمزہ فرخ اور ماسٹر ایوب کے نام شامل ہیں۔


Like it? Share with your friends!

0
19 shares

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format