کاون کے بعد سوزی اور ببلو کا بیرون ملک روانگی کا پرمٹ جاری


0

اسلام آباد وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ نے چڑیا گھر کے دو ہمالیائی ریچھوں سوزی اور ببلوکو اُردن منتقل کرنے کی یقین دہانی کرادی۔

اسلام آباد وائلڈ لائف منیجمنٹ بورڈ (آئی ڈبلیو ایم بی) کے وکیل نے اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ کو مطلع کردیا ہے کہ جب تک پاکستان میں ریچھوں کے لئے کوئی مناسب سنکچوری نہیں بنادی جاتی دونوں ہمالیائی بھوری ریچھ سوزی اور ببلو بیرون ملک پناہ گاہ میں رہیں گے۔

اس خبر کی تصدیق عالمی جانوروں کی فلاحی تنظیم “فور پاؤز” نے بھی کردی ہے۔ اس تنظیم نے گزشتہ دنوں دنیا کے تنہا ترین ہاتھی کاون کو پاکستان سے اس کے نئے گھر کمبوڈیا منتقل کرنے میں اہم کردار ادا کیا تھا ۔

Image Source: Twitter

تاہم ریچھوں کی منتقلی کا یہ فیصلہ بھی جانوروں کے حقوق کی نگرانی کرنے والے گروپ کی وجہ سے ہی عمل میں آیا کیونکہ چڑیا گھر میں ان ریچھوں کو خوفناک حالت میں رکھا گیا اور تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا ۔

اس سے قبل ،موسمیاتی تبدیلی کی وزارت (ایم سی سی) نے ریچھوں کو منتقل کرنے کے اجازت نامے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اسلام آباد میں جانوروں کی پناہ گاہ کے طور پر ایک محفوظ سنکچوری قائم کر رہی ہے۔ اس بیان سے نہ صرف فور پاؤز تنظیم بلکہ اسلام آباد ہائی کورٹ بھی حیرت زدہ تھا کیونکہ وہ جانوروں کے لئے رہائش کی ناقص صورتحال کے سبب چڑیا گھر کو بند کرنے کا حکم دے چکے تھے۔ چنانچہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے ایم سی سی اور آئی ڈبلیو ایم بی کو ہدایت کی کہ وہ 14 دسمبر تک دو ہمالیائی بھوری ریچھوں ببلو اور سوزی کے بارے میں فیصلہ کرے۔

Image Source: Twitter

چنانچہ اس کیس کی سماعت ہوئی جس کے دوران چیف جسٹس نے کہا کہ پاکستان کو جنگلی حیات کی پرواہ ہے ،عدالت صرف ان جانوروں کی فلاح و بہبود چاہتی ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں فخر کرنا چاہئے کہ پاکستانی جانوروں کے حقوق کی پرواہ کرتا ہے، اس کیس سے کوئی دلچسپی نہیں ہے بلکہ صرف جانوروں کے حقوق میں دلچسپی ہے۔ عدات نےاسلام آباد وائلڈ لائف منیجمنٹ بورڈ کے فیصلے کو سراہا اور اپنے تحریری فیصلہ میں لکھا کہ کاون، ببلو اور سوزی ہمیشہ پاکستانی عوام کے سفیر رہیں گے۔

لہٰذا عدالتی فیصلے کے بعد ہمالیائی بھورے ریچھ اب اردن میں جنگلی حیات کے محفوظ مقام میں منتقل ہونے کے لئے تیار ہیں۔ ان کی منتقلی کی تمام تر کارروائی میں فور پاؤز تنظیم مدد فراہم کرے گی۔ خیال رہے کہ یہ تنظیم شہزادی عالیہ فاؤنڈیشن کے ساتھ بطور اتحادی کام کرتی ہے۔ پاکستان سے ان ریچھوں کی منتقلی میں آئی ڈبلیو ایم بی کے عملے کا افسر بھی ان ریچھوں کے ساتھ اردن روانہ ہوگا تاکہ ان کی دیکھ بھال کی ٹرینگ حاصل کرسکے۔ نیز جب پاکستان میں ان ریچھوں کے لئے محفوظ سنکچوری تیار ہوجائے گی تو انہیں واپس منتقل کردیاجائےگا۔

جانوروں کی فلاح وبہبود کے پیش نظر اس عدالتی فیصلے کی دنیا بھر میں تعریف کی نگاہ سے دیکھا جارہا ہے۔ سوشل میڈیا صارفین ہمالیائی ریچھوں سوزی اور ببلو کی بہتر دیکھ بھال کے باعث ان کو بیرون ملک منتقل کرنے پر عدالتی اقدام کو سراہا رہے ہیں۔

اس کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے وزیر اعظم عمران خان کی اپنے پالتو کتوں کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کا بھی تذکرہ کیا اور کہا کہ وزیر اعظم کی یہ تصاویر جانوروں کے ساتھ سلوک سے متعلق فیصلے کی حمایت کرتی ہیں۔


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format