امریکی غوطہ خور کو سمندر شکار مہنگا پڑ گیا، وہیل نے زندہ نگل لیا


0

کسی نے کیا خوب کہا ہے کہ قسمت اور تقدیر انسان کا کب ساتھ دے دے، انسان کو خود بھی نہیں معلوم لیکن جب قسمت کی کنجی انسان کے ہاتھ میں ہوتی ہے، تو پھر بڑے بڑے تصورات یقینی بنتے دیکھا دیتے ہے۔

ایسا ہی ناقابل یقین واقعہ گزشتہ ہفتے امریکی کے میساچیوسٹس میں پروونس ٹاؤن سے متصل سمندر میں پیش آیا، جہاں ایک غوطہ خور کو وہیل نے زندہ سالم نگل لیا،لیکن پھر تقدیر کے کھیل کا آغاز ہوا اور دیوقامت وہیل نے غوطہ خور کو محض 40 سیکنڈ کے اندر سطح سمندر پر زندہ حالت میں واپس اُگل دیا۔

Image Source: Getty Images

تفصیلات کے مطابق جمعے کے روز 56 سالہ امریکی غوطہ خور مائیکل پیکارڈ نے لابسٹر پکڑنے کے لیے میساچیوسٹس کے سمندر میں غوطہ لگایا۔ لابسٹر کے حوالے سے مشہور ہے کہ یہ سمندر کی گہرائی میں پائے جاتے ہیں، لہذا یہ سمندری مقام کافی گہرائی میں ہے، چنانچہ غوطہ خور نے اس سلسلے میں چھلانگ لگائی لیکن بدقسمتی سے محض 10 فٹ پہلے ہی اچانک ایک ہمپ بیک وہیل نے غوطہ خور مائیکل پیکارڈ کو زندہ سالم اپنے اندر نگل لیا اور اپنا منہ بند کرلیا۔

امریکی میڈیا سے اس عجیب وغریب واقعے کا احوال بتاتے ہوئے غوطہ خور مائیکل پیکارڈ کا کہنا تھا کہ یہ سب کچھ بالکل اچانک ہوا، ’’مجھے پانی کے اندر زبردست تلاطم کا احساس ہوا اور پھر اگلے ہی لمحے ہر طرف مکمل اندھیرا سا چھا گیا۔‘‘

Image Source: Screengrab

اس موقع پر غوطہ خور مائیکل پیکارڈ کا مزید کہنا تھا کہ ’انہیں محسوس ہو رہا تھا کہ وہ حرکت کر رہے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ وہ وہیل کے منہ میں سکڑتے ہوئے پٹھوں کو بھی محسوس کر رہے تھے۔‘‘ چنانچہ جب میں وہیل کے منہ میں چلا گیا اور ہر طرف مکمل طور پر اندھیرا ہوگیا، میں اپنی موت کو بہت قریب سے محسوس کر رہا تھا، میں نکلنا چاہتا تھا، لیکن کوئی راستہ دکھائی نہیں دے رہا تھا۔

مائیکل پیکارڈ کے مطابق اس دوران انہیں اپنے بیٹوں کا خیال آیا، جن کی عمر 12 برس اور 15 برس ہے۔ لہذا میں نے مچھلی کے پیٹ کے اندر حرکت شروع کردی اور اپنے ہاتھ پیر مارنا شروع کردیئے۔ جس پر مچھلی نے اپنے سر کو زور زور سے ہلانا شروع کر دیا اور اس کے ردعمل کے طور پر وہیل نے محض 40 سیکنڈ کے بعد ہی اسے سطح سمندر پر آکر اگل دیا۔

چنانچہ آس پاس کی کشتی والوں نے غوطہ خور مائیکل پیکارڈ کو سمندر سے نکالا اور فوری طور پر اسپتال پہنچا دیا۔ خوش قسمتی سے اس کی کھال پر خراشیں ہی آئی تھیں جبکہ اس کی کوئی ہڈی یا کوئی اور دیگر تکلیف بھی اسے نہیں پہنچی تھی۔

یہاں یہ بات جاننا ضروری ہے کہ وہیل مچھلی کے انسانوں کو نگلنے کے واقعات اس قدر کم ہوتے ہیں کہ اکثر انہیں ناقابلِ یقین سمجھتی ہے۔ اصل میں انسان وہیل کی خوراک میں شامل نہیں ہیں، وہیل سمندر میں موجود چھوٹی مچھلیوں یا دیگر سمندری حیاتیات کو اپنی خوراک بناتی ہے۔

واضح رہے ایسا ہی دلخراش واقعہ کچھ عرصہ قبل سکھر کے علاقے صالح پٹ میں پیش آیا تھا، جہاں 8 سالہ زہرہ نامی بچی نہر کے کنارے کھڑی تھی کہ اچانک نہر میں سے ایک مگرمچھ نکلا اور اس نے زاہدہ پر حملہ ججا اور اسے نہر میں کھینچ کر لے گیا، خونخوار مگرمچھ نے معصوم بچی کو وہیں نگلا اور فورا وہاں سے غائب ہوگیا۔ علاقہ مکین کے مطابق وہ ایک بڑا اور طاقتور مگرمچھ تھا، جس تقریباً کل لمبائی 16 فٹ کے قریب تھی۔ لوگوں نے ہر ممکن کوشش کی لیکن تمام کوششیں ضائع ہوگئیں۔

Story Courtesy: Express News


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
1
love
lol lol
0
lol
omg omg
1
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format