نازیبا تصویریں اور ویڈیوز سے خواتین کو حراساں کرنے والا مجرم گرفتار


0

محبت کا جھانسہ دے کر خواتین کی فحش ویڈیوز اور تصویریں لینا پھر انہیں بلیک میل کرکے رقم اینٹھنے کے واقعات ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتے جارہے ہیں۔ ایسا ہی ایک واقعہ راولپنڈی میں پیش آیا ہے جس میں فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے سائبر کرائم ونگ نے سوشل میڈیا پر خاتون کو ہراساں کرنے اور اس کی غیر اخلاقی ویڈیو اپلوڈ کرنے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق اس سفاک ملزم کی شناخت شیراز ایاز خان کے نام سے ہوئی ہے جس کا تعلق راولپنڈی سے ہے۔ اس شخص نے مبینہ طور پر اپنی خاتون دوست کو ناجائز تعلقات میں رکھنے کے لئے بلیک میل کیا اور ایسا نہ کرنے کی صورت میں لڑکی کی غیر موزوں ویڈیوز اور تصاویر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنے کی دھمکی دی۔

Image Source: Twitter

یہ متاثرہ لڑکی جو جہلم کے ایک چھوٹے سے گاؤں کی رہائشی ہے، اس نے سائبر کرائم سیل کو بتایا ہے کہ ملزم نے اس کی نامناسب ویڈیوز اور تصاویر بنائیں اور اسے اپنے ساتھ زبردستی رہنے پر مجبور کیا۔ اس کے علاوہ متاثرہ لڑکی نے اپنی شکایت میں یہ بھی دعویٰ کیا ہے کہ ملزم نے واٹس ایپ پر اس کی فحش ویڈیوز بھیجیں اور اس کو دھمکی دی کہ اگر وہ اس کی بات نہیں مانے گی تو وہ انہیں سوشل میڈیا پر وائرل کردے گا۔

واضح رہے کہ یہ ملزم لڑکی کو بلیک میل کرکے پہلے ہی اس سے 50،000 روپے ہتھیا چکا تھا اور مزید رقم کا مطالبہ کررہا تھا، رقم نہ بھیجنےکی صورت میں لڑکی کو مزید ویڈیوز اور تصویریں وائرل کرنے کی دھمکیاں دیں تھیں۔

Image Source: Twitter

اس متاثرہ لڑکی کی شکایت موصول ہونے پر ایف آئی اے کی سائبر کرائم کی ٹیم حرکت میں آگئی اور اس ملزم کو اسلام آباد کے قریب منڈی موڑ سے اس وقت حراست میں لیا جب وہ لڑکی کو لینے کے لئے وہاں پہنچا تھا۔ ایف آئی اے نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے بعد معاملے کی تحقیقات کا آغاز کردیا۔

خیال رہے کہ خواتین کو آن لائن عصمت دری کی دھمکیوں، آن لائن ہراساں کرنے، سائبر اسٹاکنگ ، بلیک میلنگ کے واقعات روزمرہ کی بنیاد پر رونما ہورہے ہیں۔حال ہی میں عدالت نے طالبہ کے اغواء، ریپ اور پورن وڈیوز بنانے کے مشہور کیس میں ملوث میاں بیوی کو جرم ثابت ہونے پر سزائے موت اور عمر قید کی سزائیں سنائیں۔ ان شیطان صفت میاں بیوی نے طالبہ کو اغواء کرکے اس کے ساتھ جبری زیادتی کرتے ہوئے اس کی پورن وڈیو بناکر وائرل کردی تھی۔ اس کے علاوہ یہ ملزمان کم عمر بچیوں اور شادی شدہ خواتین کو زیادتی کا نشانہ بناکر ان کی ویڈیوز وتصاویر بناتے تھے۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایف آئی اے خواتین کو ہراساں کرنے اور بلیک میلینگ میں ملوث افراد کے خلاف کاروائیاں کرتی رہتی ہے۔ تاہم ایسے واقعات کی روک تھام کے لئے ابھی تک ملک میں کوئی عملی اقدامات نہیں کئے گئے ہیں۔


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format