صدر عارف علوی اختیارات کے غلط استعمال پر تنقید کی زد میں آگئے


0

اپوزیشن سینیٹرز نے جمعہ کو صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی کو اپنے عہدے کا غلط استعمال کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا، بلوچستان کے ایک سینیٹر نے اپوزیشن پر زور دیا کہ وہ ان کے خلاف نااہلی کا مقدمہ دائر کرنے پر سنجیدگی سے غور کریں۔

تفصیلات کے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے صدر عارف علوی کے خطاب پر گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر طاہر بزنجو نے موقف اپنایا کہ آئین کے تحت صدر پاکستان کو غیر جانبدار ہونا چاہیے۔

Image Source: Pakistan Today

تاہم انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ جب صدر ڈاکٹر عارف علوی نے پارلیمنٹ میں بات کی تو وہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رکن کے طور پر بول رہے تھے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ اسی لیے ان کی تقریر میں حکومت کی تعریف کے سوا کچھ نہیں تھا۔

نیشنل پارٹی کے رہنما نے نشاندہی کی کہ قاضی فائز عیسیٰ کیس میں اپنے فیصلے میں سپریم کورٹ نے قرار دیا تھا کہ سپریم کورٹ کے جج کے خلاف صدارتی ریفرنس بد نیتی (دھوکہ دینے کے ارادے) سے متاثر تھا۔

’انہوں نے غصے بھرے انداز سے پوچھا کہ آپ کو بلوچستان کے ایک معزز جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ سے اتنی الرجی کیوں ہے؟‘‘۔ اس کے علاوہ انہوں نے الزام عائد کیا کہ سندھ کے گورنر ہاؤس کو صدر کے ذاتی کاروبار کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے جو کہ ان کے حلف کی خلاف ورزی ہے۔

Image Source: File

اس حوالے سے انہوں نے صدر سے مطالبہ کیا کہ وہ آئین کے فرمودات کے پیش نظر اپنی دانشمندی کا مظاہرہ کریں۔ انہیں ملک کے صدر کی طرح کام کرنا چاہیے، پی ٹی آئی کے صدر کی طرح نہیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی سینیٹر قرۃ العین مری نے اپنی تقریر میں صدر پر الزام لگایا کہ وہ اپنے بیٹے کے ڈینٹل کلینک کے افتتاح کے لیے ریاستی ادارے کو استعمال کر رہے ہیں۔ سینیٹر نے دعویٰ کیا کہ صدر عارف علوی کا بیٹا گورنر ہاؤس میں بیٹھ کر امریکی کمپنیوں سے ڈیل کر رہا تھا۔

Image Source: Twitter

واضح رہے گزشتہ سال نومبر میں منعقدہ تقریب میں علوی ڈینٹل ہسپتال اور برنگنگ اسمائل یو ایس اے کے درمیان پاکستانی عوام کو سستی دانتوں کی دیکھ بھال فراہم کرنے کے لیے ایک معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے۔ تقریب کی ایک تصاویر میں صدر پاکستان کو پس منظر میں کھڑے دیکھا گیا تھا۔

مزید پڑھیں: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا ‘کورولش عثمان’ کے سیٹ کا دورہ

بعدازاں ڈاکٹر عارف علوی نے تقریب کے بعد ٹویٹر پر اپنے بیٹے کو مبارکباد دی۔ جوں ہی اس تقریب کی تصاویر سوشل میڈیا پر گردش کرنے لگیں تو کئی سیاستدانوں نے گورنر ہاؤس کو نجی تقریب کے لیے جگہ کے طور پر استعمال کرنے پر تنقید کی۔

سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے صدر کی جانب سے اس اقدام کو “اہم تضاد” قرار دیا تھا ۔ انہوں نے ٹویٹ کیا کہ “آئین کے آرٹیکل 42 جو صدر کے حلف سے متعلق ہے، میں بھی مندرجہ ذیل شق ہے: “میں اپنے ذاتی مفاد کو اپنے سرکاری طرز عمل یا اپنے سرکاری فیصلوں پر اثر انداز ہونے کی اجازت نہیں دوں گا۔”

اس حوالے سے پھر صدر پاکستان کے بیٹے ڈاکٹر ابواب علوی سامنے آئے اور انہوں نے انکشاف کیا کہ تقریب کا اصل مقام علوی ڈینٹل تھا لیکن سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر اسے تبدیل کر دیا گیا۔


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Choose A Format
Personality quiz
Series of questions that intends to reveal something about the personality
Trivia quiz
Series of questions with right and wrong answers that intends to check knowledge
Poll
Voting to make decisions or determine opinions
Story
Formatted Text with Embeds and Visuals
List
The Classic Internet Listicles
Countdown
The Classic Internet Countdowns
Open List
Submit your own item and vote up for the best submission
Ranked List
Upvote or downvote to decide the best list item
Meme
Upload your own images to make custom memes
Video
Youtube, Vimeo or Vine Embeds
Audio
Soundcloud or Mixcloud Embeds
Image
Photo or GIF
Gif
GIF format